افراد کے آنے جانے سے امریکا کی سامراجی پالیسیاں تبدیل نہیں ہوتیں ، متولی آستان قدس
آ‎ستان قدس رضوی کے متولی نے کہا ہے کہ افراد کے آنے جانے سے امریکا کی سامراجی اور ظالمانہ پالیسیاں تبدیل نہيں ہوتيں
بدھ , 11/11/2020 - 22:54
آ‎ستان قدس رضوی کے متولی نے  کہا ہے کہ  افراد کے آنے جانے سے امریکا کی سامراجی اور ظالمانہ  پالیسیاں تبدیل نہيں ہوتيں
آستان قدس رضوی کے متولی نے رہبر انقلاب اسلامی کے اس بیان کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ جو بھی امریکہ کا صدر بنے اس سے ہمارے موقف میں کوئی تبدیلی نہيں آئے گی کہا کہ کہ امریکہ میں کس شخص کو صدارت کے لئے منتخب کیا گیا ہے ہمارے لئے اہمیت نہیں رکھتا کیونکہ افراد کے بدلنے سے امریکہ کی سامراجی اور ظالمانہ پالیسیوں میں تبدیلی نہیں آتی۔

آستان نیوز کی رپورٹ کے مطا بق؛ حجت الاسلام والمسلمین احمد مروی نے آستان قدس رضوی کی نمائندہ کونسل کے اراکین کے ساتھ میٹنگ کے دوران جو   حرم امام علی رضا علیہ السلام کے ولایت ہال میں منعقد ہوئی امریکا کے  صدارتی انتخابات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ امریکا میں کس شخص کو صدارت کے لئے منتخب کیا جاتا ہے  اس  کی ہمارے لئے کوئی اہمیت نہیں ہے      کیونکہ لوگوں کے بدلنے سے امریکہ کی سامراجی اور ظالمانہ   پالیسیوں میں تبدیلی نہیں آتی، لہذا  اس سلسلے میں ہمارا موقف وہی ہے جو رہبر   انقلاب  اسلامی نے فرمایا ہے کہ امریکی انتخابات کا ہماری ملکی پالیسیوں پر کوئی اثرمرتب  نہیں ہوتا ۔ 
انہوں نے اس بات کا ذکرکرتے ہوئے  کہ اسلامی جمہوریہ ایران امریکہ کی ظالمانہ اور سامراجی  پالیسیوں  کا مخالف  ہے کہا کہ ہم امریکا کی سیاسی  پارٹیوں میں سے کسی کے موافق یا مخالف نہیں ہیں بلکہ امریکی حکومت کے سامراجی اور طاغوتی نظام کے  مخالف ہيں     حجت الاسلام مروی     نے کہا کہ  صدر کی تبدیلی سے ہماری پالیسیاں تبدیل نہیں ہوں گی کیونکہ امریکہ میں صدر کی تبدیلی سے کوئی تبدیلی واقع نہیں ہو گی۔ 
آستان قدس رضوی کے متولی نے  اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ ریپبلیکنز  اور ڈیموکریٹس  کے طریقہ کار مختلف ہو سکتے ہیں لیکن ان کی سیاست اور ہدف و مقصد ایک ہے ؛ کہا کہ امریکی ریپبلیکنز  ہوں  یا ڈیموکریٹس بقول حضرت امام خمینی(رضوان اللہ تعالیٰ علیہ) وہ  سب  بھیڑیے اور بہت بڑے شیطان ہیں لہذا ہمارے لئے دونوں پارٹیوں میں کوئی فرق نہیں ہے مگر یہ کہ ان کی سیاست اور پالیسیوں میں بنیادی  تبدیلی آئے پھر  امریکی  نظام کے بارے میں ایران کی سوچ  بھی  تبدیل ہو سکتی ہے البتہ ایسا بعید نظر آتا ہے   ۔ 
انہوں نے خطے میں امریکا   کے مجرمانہ اقدامات اور دہشت گردانہ   کارروائیوں  کا ذکر کرتے ہوئے کہا  داعش جیسے شجرہ خبیثہ  کو وجود میں لانے  اور اس   خونخوار گروہ کو تشکیل دینے میں    ڈیموکریٹس  کا  بہت بڑا کردار ہے   اور یہ دہشت گرد گروہ  ڈیموکریٹس   کی ہی  مجرمانہ شکل اور انہی   کی برائیوں میں سے ایک  ہے  آستان قدس کے متولی نے  کہا کہ  خطے میں مداخلت، بیت المقدس کی غاصب صیہونی حکومت اور علاقے کی عرب رجعت پسند حکومتوں  کی حمایت امریکا کے ڈیموکرٹیس کے سیاہ کارنامے ہیں بنابریں  ا س سے پتہ چلتا ہے   کہ امریکہ میں افراد اور پارٹیوں کی تبدیلی سے  واشنگٹن کے سامراجی و طاغوتی اہداف  و مقاصد تبدیل نہیں ہوتے ۔ 
نیشنل اینٹی کورونا ہیڈکوارٹر    ایران کے مقدس مقامات کے ماہرین کی  آراء  پر توجہ دے 
حجت الاسلام والمسلمین مروی نے   اپنے خطاب میں  ملک میں کورونا وبا کے پھیلاؤ کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ پوری دنیا اورہمارا ملک کرونا وائرس کے پھیلاؤ کی وجہ سے مشکلات سے دوچار ہے  جیسا کہ پہلے بھی بیان کیا تھا کہ آستان قدس رضوی ؛ رہبر انقلاب اسلامی کے احکامات اور تاکید ات  کی پیروی کرتے ہوئے مکمل طور پر   نیشنل     اینٹی کورونا  ہیڈ کوارٹر کے ساتھ ہم آہنگ ہے اور   کورونا ہیڈکوارٹر سے  ہمیں  جو بھی  حکم ملتا ہے اس پر عمل  کرتے ہیں کرتے رہيں گے    اور اب تک عمل کرتے آئے ہیں۔ 
انہوں نے اس آفت سے نمٹنے کے لئے دعا و توسل اور روحانیت پر توجہ دینے کی ضرورت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ آستان قدس اپنے آپ کونیشنل  اینٹی  کورونا   ہیڈ کوارٹر کے تابع سمجھتا ہے لیکن اسے  بھی چاہئے کہ مقدس مقامات بالخصوص حرم امام علی رضا علیہ السلام کے بارے میں  کوئی بھی فیصلہ کرنے  سے پہلے آستان قدس  کے   ذمہ داروں    کے ساتھ مشاورت کرے۔ 
آستان قدس رضوی کے متولی   نے  کہا کہ ہم یہ نہیں کہتے کہ ہماری رائے پر عمل کریں بلکہ ہم کہتے ہیں کہ اپنے ماہرین کے علاوہ مقدس مقامات کے ماہرین کی آراء کو بھی سنیں ۔ 
انہوں نے  کہا کہ حضرت امام علی رضا علیہ السلام کے حرم مطہر میں جو سہولیات. پائی جاتی  جو توانائیاں  حرم مطہر کے پاس  ہیں وہ دیگر مراکز میں نہیں پائی جاتیں اور یہ نہیں کہا جا سکتا کہ حضرت امام علی رضا علیہ السلام کا حرم مطہر بھی دیگر مراکز جیسے مارکیٹ یا میٹرو وغیرہ کی طرح ہے اور سب کو ایک ہی نظر سے دیکھا جائے ۔ اس مقدس مقام کی قداست سے قطع نظر یہاں پر جو سہولیات مہیا  ہیں وہ کسی دوسرے مراکز میں نہیں پائی جاتیں۔ 
 آستان قدس رضوی کے متولی نے  کہا  کہ  نیشنل  اینٹی کورونا   ہیڈکوارٹر اور  وزارت صحت کے   اعلی حکام    یہاں  آئيں  اور  ہماری سہولیات اور  توانائیوں   کا جائزہ لیں  اور اس کے بعد    اگر اس نتیجہ پر پہنچتے ہیں کہ ہماری سہولیات اور وسائل   حفظان صحت کے اصولوں   کے مطابق   نہيں ہيں تو  ہم  ان کی بات کو قبول کرلیں گے   ۔ 
 

ماخذ :