حرم مطہر رضوی میں اسلامی فن معماری – مسجد جامع گوہر شاد
2020-11-17
مسجد جامع گوہر شاد؛ تیموری دور حکومت کی ایک قدیم اور پرشکوہ عمارتوں میں سے ایک ہے کہ جس کی نویں صدی ہجری کے اوائل میں بنیاد رکھی گئي ہے ۔ یہ مسجد محترمہ گوہر شاد کے حکم پر 821 ہجری قمری میں تعمیر ہوئی ، کہ جو تیموری زمانے کی ایک عظیم شاہکار ہے۔ اس کے طاق گنبدی شکل میں اور اس کے مینار خصوصی تزئینات کے ساتھ تعمیر ہوئے اور اس مسجد میں مقرنس طرز معماری کے استعمال نیز عہد تیموری کے مخصوص فن معرق کاری اور گچکاری نے حرم مطہر کے قلب میں اسلامی و ایرانی فن معماری کا ایک شاندار اور غیر معمولی جلوہ پیش کیا ۔مسجد کے تمام گوشے شفاف ٹائلوں سے آراستہ ہیں اور اس کے تمام ایوانوں اور دیواروں پر اسماء الہی و آیات قرآنی اور احادیث جن میں سے بعض مسجد کے فضائل سے متعلق ہیں کندہ اور تحریر ہیں۔