عالمی اہلبیت (ع) اسمبلی کے جوائنٹ سیکرٹری اور رضوی علوم اسلامی یونیورسٹی کے سربراہ کی ملاقات
بدھ , 11/18/2020 - 8:10
عالمی اہلبیت (ع)  اسمبلی کے  جوائنٹ سیکرٹری  اور رضوی علوم اسلامی    یونیورسٹی کے سربراہ کی ملاقات
دارالتقریب بین المذاہب کے یوم تأسیس کی مناسبت سے رضوی علوم اسلامی یونیورسٹی کے سربراہ اور عالمی اہلبیت(ع) اسمبلی کے جوائنٹ سیکرٹری نے اپنی ملاقات میں تعلیمی اور تحقیقی شعبوں میں دونوں اعلی تعلیمی مراکز کے مابین زیادہ سے زیادہ تعاون پر زور دیا

آستان نیوز کی رپورٹ کے مطابق؛  رضوی علوم اسلامی   یونیورسٹی کے سربراہ حجت الاسلام والمسلمین سید حسن وحدتی شبیری نے  اس ملاقات میں    عالمی اہلبیت (ع)  اسمبلی اوررضوی  علوم اسلامی   یونیورسٹی کے مابین  ماضی کے شاندار  باہمی تعاون    کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس مخلصانہ تعاون کا ایک قابل قدر   نتیجہ  اس  یونیورسٹی میں شام سے تعلق رکھنے والے  طلبا  کو  اعلی تعلیم کی فراہمی  ہے   ۔ 
رضوی علوم اسلامی   یونیورسٹی کے سربراہ نے عالمی  اہلبیت(ع)  اسمبلی اوررضوی  یونیورسٹی کے مابین گہرے اور مضبوط تعاون  پر زو ر دیا  
رضوی یونیورسٹی میں غیر ملکی  طلبا  کو تعلیم  دینے کی بہترین  صلاحیت پائي جاتی ہے 
عالمی اہلبیت(ع)  اسمبلی  کے  جوائنٹ  سیکرٹری جنرل حجت الاسلام والمسلمین احمد احمدی تبار نے  بھی اس ملاقات میں    کہا کہ رضوی علوم اسلامی  یونیورسٹی ؛ حضرت امام علی بن موسیٰ الرضا علیہ السلام کے حرم مطہر کے جوار میں واقع  ہونے کی وجہ سے خاص اہمیت کی حامل ہے ، ان کا کہنا تھا کہ رضوی  علوم اسلامی   یونیورسٹی میں اہلبیت علیہم السلام کے چاہنے والے غیرملکی  طلبا   کا داخلہ بہت زیادہ اہمیت رکھتا ہے کیونکہ   شیعوں کا علمی اور روحانی اعتبار  سے  بلند و بالا مقامات تک پہنچنے کے لئے حضرت امام علی رضا علیہ السلام سے متمسک ہونا ضروری ہے  ۔
انہوں نے عالمی  اہلبیت(ع)   اسمبلی کی نئی حکمت عملی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ بیرون ملک سے آنے والے شیعہ طلباء کو چاہئے کہ ایران میں داخلے  کے بعد اپنے ملک کی صورتحال  پر نظر رکھیں  اور اپنے اپنے  ملکوں سے رابطہ کو برقرار رکھیں ۔ انہوں نے کہا کہ  رضوی علوم اسلامی   یونیورسٹی کے پاس  دیگر ممالک کے طلباء کو داخلہ دینے کا وسیع تجربہ ہے اور  اہل بیت یونیورسٹی کو چاہئے کہ وہ  ان طلبا کو اپنے یہاں  پی ایچ ڈي  کرنے کے لئے راغب کرے   
واضح ر ہے  کہ اس اجلاس میں رضوی علوم اسلامی   یونیورسٹی  میں پی ایچ ڈي کرنے والے شامی طلبا بھی موجود تھے   جنھوں نے عالمی  اہلبیت(ع)   اسمبلی کے ساتھ  اپنی علمی و تبلیغی سرگرمیوں کے بارے میں اپنے خیالات کا اظہار کیا  

ماخذ :