ماہر افرادی قوت کی شناخت کرکے اسلامی انقلاب کی خدمت میں استفادے پر تاکید
ہفتہ , 11/21/2020 - 8:34
ماہر افرادی قوت  کی شناخت کرکے  اسلامی انقلاب کی خدمت میں استفادے پر تاکید
حجت الاسلام مروی نے آستان قدس رضوی کےاوقاف کی پیدواری فاؤنڈیشن کے ممبران سے خطاب میں کہا کہ باصلاحیت اور ماہر افرادی قوت کی شناخت کرکے اس سے اسلامی انقلاب کی خدمت کے استفادہ کرنا آستان قدس کی ذمہ داری ہونی چاہئے

آستان قدس رضوی کے متولی حجت الاسلام مروی نے کہا کہ باصلاحیت اور ماہر افرادی قوت کی شناخت  کرکے  اسے آستان قدس میں تربیت دی جائے اور پھر اسلامی انقلاب اور اسلامی نظام کی خدمت کے لئے ایسے باصلاحیت لوگوں کی توانائی سے استفادہ کیا جائے ۔ان کا کہنا تھا کہ آستان قدس رضوی جیسی عظیم ارگنائزیشن کو اس طرح کے اہم کاموں کے مرکز میں تبدیل ہونے کی ضرورت ہے
  انہوں نے کہا کہ اس سال کا نعرہ" تیز رفتار پیداوار   " ہے، لہذا آستان قدس کو بھی موجودہ سخت اقتصادی جنگ میں اپنا بھرپور کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے ۔ آستان قدس کے متولی  نے  کہا کہ اوقاف کے ادارے کو زیادہ سے زیادہ آمدنی بڑھانے کی کوشش کرنی ہوگي تاکہ عام لوگوں کو فائدہ  پہنچ سکے ۔ انہوں نے کہا کہ آستان قدس کے تمام شعبوں   منجملہ اقتصادی شعبے کو چاہئے کہ   شرع کے مطابق اور امام رضا (ع)  نیز تمام ائمہ اطہار کی تعلیمات کی روشنی میں آگے بڑھے۔ اس طرح کہ آمدنی کا حصول اصولی کام کے ذریعے سے حاصل ہو۔ ان حیلہ گر لوگوں کی طرح نہیں جو کم مدت میں شیطانی طریقوں سے بازار کو متاثر کرکے کروڑوں کی کمائی کرلیتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ایسی آمدنی صحیح اور حلال آمدنی نہیں کہلائي جاسکتی۔ اس لئے حضرت امام رضا (ع) کے زیر نظر اداروں کی آمدنی صحیح ذرائع سے اور شرع کی حدود میں رہنی چاہئے۔   
حجت الاسلام مروی نے کہا کہ آستان قدس رضوی میں نوجوانوں کو زیادہ سے زیادہ روزگار کے مواقع فراہم کئے جائيں۔ انہوں نے کہا کہ ایسے روزگار کے مواقع جہاں نوجوانوں کو زیادہ سے زیادہ کام کے مواقع مل سکیں  
انہوں  نے زور دے کر کہا کہ آستان قدس کے کارخانوں میں جتنی بھی مصنوعات تیار ہوتی ہیں
  کیفیت کے لحاظ سے انہیں ممتاز ہونا چاہئے  اور ان مصنوعات کے لئے خلاقیت اور اعلی معیارکو ہمیشہ سامنے رکھا جائے۔ ہم زرق و برق والی پیداواریا مصنوعات کی بات نہيں کررہے ہيں بلکہ ہمارا مقصد یہ ہو کہ ہر پیداوار معیار کے لحاظ سے اعلی ترین کیفیت کی حامل ہو۔
حجت الاسلام مروی نے اسی طرح برآمدات کی اہمیت پر بھی زور دیا اور کہا کہ ہمیں خصوصیت کے ساتھ ہمسایہ ممالک پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ آستان قدس کی غذائی پیداوار کو معتبر سمجھا جاتا ہے ، خصوصا" اسلامی ممالک کے مسلمانوں میں،  حضرت امام رضا  (ع)  سے عقیدت کی بنا پر وہ اسےاستعمال کرنا پسند کرتے ہیں۔ ہم اس بنا پر ان ملکوں میں اپنا یہ سامان بھیج سکتے ہیں۔

 

ماخذ :