حضرت امام علی رضا(ع) کی زیارت کی غیر معمولی فضیلت
منگل , 04/27/2021 - 16:20

’’حمدان بن اسحاق‘‘ کہتا ہے: میں امام محمد تقی علیہ السلام کی خدمت میں گیا اور عرض کیا : جوآپ کے والد بزرگوارؑ کی طوس میں زیارت کرے ، اس کے لئے کیا پاداش و جزاء ہے؟ امامؑ نے فرمایا:’’ جو بھی میرے والد محترم کی طوس میں زیارت کرے گا، خداوند عالم اس کے گزشتہ اورآئندہ کے تمام گناہ معاف فرما دے گا۔‘‘
حمدان کہتا ہے: میں حضرت رضا علیہ السلام کی زیارت کرنے کے بعد حج کے لئے مکہ چلا گیا، وہاں میری ملاقات’’ایوب بن نوح‘‘ سے ہوئی، اس نے بتایا کہ حضرت محمد تقی علیہ السلام نے مجھ سے فرمایا:’’جو بھی میرے والد محترم کی قبر اطہر کی طوس میں زیارت کرے ، تو خداوند اس کے پچھلے اور اس کے بعد کے گناہ معاف کر دیتا ہے اور اس کے لئے پیغمبر خدا(ص) اور حضرت علی(ع) کے رو برو ایک منبر لگا دیا جائے گا، یہاں تک کہ خداوند عالم مخلوق کے حساب سے فارغ ہو جائے۔‘‘
زائر امام رضا(ع) خداوند عالم کا افضل ترین مہمان:
حضرت امام موسیٰ کاظم علیہ السلام نے ایک حدیث میں فرمایا: ’’ جب روزِ قیامت برپا ہوگا، تو چار افراد اولین میں سے اور چار افراد آخرین میں سے عرش الہی پر جلوہ افروز ہوں گے۔ اولین میں سے چار افراد یہ ہیں: حضرت نوحؑ،حضرت ابراہیمؑ،حضرت موسیٰؑ اور حضرت عیسیٰؑ اور آخرین میں سے چار افراد یہ ہیں: حضرت محمد مصطفیٰ(ص)، حضرت علی ؑ، حضرت امام حسنؑ اور حضرت امام حسینؑ‘‘۔ پھر امام موسیٰ کاظم علیہ السلام نے بات کو جاری رکھتے ہوئے فرمایا: ’’آئمہ معصومین علیہم السلام کی قبور کے زائرین ہمارے ساتھ ہوں گے، (البتہ) جان لو! کہ سب سے برتر اور بلند و بالا درجہ میرے بیٹے ’’رضاؑ‘‘ کی قبر کے زائرین کو حاصل ہوگا۔‘‘