حضرت امام رضا(ع) کی شیعوں کی نسبت عنایت و مہربانی
منگل , 04/27/2021 - 16:22

شیعہ نقطہ نظر سے  امام ایک ایسے مہربان اور دلسوز والد کی مانند ہے، جو ہمیشہ اپنی اولاد کی بہتری اور خیر خواہی کی فکر میں رہتا ہے ، جیسا کہ حضرت رضا علیہ السلا م نے فرمایا:’’ امام ؛مہربان مونس، شفیق باپ، دلسوز بھائی اور اپنے چھوٹے بچے کی نسبت خیر خواہ ماں کی طرح ہے۔‘‘
یہی وجہ ہے کہ ہم حضرت رضا(ع) کو امام رؤف و مہربان جانتے ہیں ، کیونکہ حضرت کا لطف و کرم ہمیشہ ان کے شیعوں کے شامل حال رہا ہے۔
’’عبد اللہ بن ابان‘‘ جو کہ حضرت امام علی رضا علیہ السلام کی خاص توجہ کا حامل شخص تھا ، کہتا ہے : میں نے حضرتؑ کی خدمت میں عرض کیا: میرے خاندان والوں کے لئے دعا فرمائیں! حضرتؑ نے فرمایا:’’تم کیا سمجھتے ہو ہم دعا نہیں کرتے؟! خدا کی قسم! تم لوگوں کے اعمال ہر شب و روز ہمارے سامنے پیش کئے جاتے ہیں۔‘‘ عبد اللہ کہتا ہے : میں نے اس بات کو بڑا سمجھا اور تعجب کرنے لگا۔
حضرتؑ نے (میری کیفیت ملاحظہ کی تو) فرمایا:’’ کیا تم نے خداوند عالم کی کتاب نہیں پڑھی!’’اور اے رسول(ص) تم کہہ دو! تم عمل کرو، پس خدا، اس کا رسول(ص) اور مومنین تمہارے اعمال و رفتار کو مشاہدہ کریں گے‘‘ پھر حضرت نے فرمایا: خدا کی قسم ! وہ مومن علی بن ابی طالبؑ (اور ان کے معصوم فرزند) ہیں‘‘۔