کرامت رضوی فاؤنڈیشن میں سائنسی ایجادات کے شعبے کا قیام
بدھ , 06/02/2021 - 17:55
کرامت رضوی فاؤنڈیشن    میں سائنسی  ایجادات کے  شعبے کا قیام
ایران کے محمکہ سائنس و ٹیکنالوجی کے تعاون سے آستان قدس رضوی سے وابستہ کرامت رضوی فاؤنڈیشن میں ایجادات اور اختراعات کا نیاشعبہ قائم کیا جارہا ہے

آستان نیوز کی رپورٹ کے مطابق؛ آستان قدس رضوی کے متولی حجت الاسلام والمسلمین احمد مروی اور  سائنس  و ٹیکنالوجی کے امور میں   ایران کے نائب صدر    ڈاکٹر سورنا ستاری  کی موجودگی میں  اس سمجھوتے پر دستخط ہوئے
  اس سمجھوتے کے تحت   سائنس و ٹیکنالوجی کا محکمہ  زائرین اور مجاورین کی مخلصانہ  خدمات کا دائرہ وسیع  تر کرنے اور سماجی خدمات کو  مزید بہتر بنانے کے لئے  آستان قدس رضوی  کے ساتھ سائنس و ٹیکنالوجی کے میدان میں تعاون کرے گا  اور اس کے لئے   کرامت رضوی فاؤنڈیشن میں سائنسی ایجادات اور اختراعات  نیا شعبہ کھولا جائے گا   
مذکورہ  سمجھوتے کے مطابق ایران  کا  محکمہ سائنس و ٹیکنالوجی  آستان قدس رضوی سے وابستہ کرامت رضوی فاؤنديشن  کو   سائنس   اور ٹیکنالوجی کے میدان میں ایجاد ات   کو آگے بڑھانے کے تعلق سے  ماہرافرادی قوت   کے ساتھ ساتھ  مختلف کمپنیوں کے ساتھ  آستان قدس کے روابط کو آسان  بنانے نیز  دیگر مادی    ومعنوی  ضروریات کو   پورا کرے  گا
 اس  سمجھوتے کے تحت آستان قدس رضوی سے وابستہ کرامت رضوی فاؤنڈیشن   سائنسی اور ٹیکنالوجی ایجادت اور اختراعات کے لئے  ایک مناسب جگہ فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ متعلقہ ٹیموں کو باصلاحیت بنانے کی غرض سے ان  کی ٹریننگ اور  سائنس و ٹیکنالوجی کے اس کمپلیکس  کی پیداوار کے لئے منڈیوں کی تلاش  کا    کام  انجام دے گا   
کرامت رضوی فاؤنڈیشن اور ایران کے محکمہ سائنس و ٹیکنالوجی کے درمیان ہونے والے اس سمجھوتے پر دستخط کی تقریب میں  خطاب کرتے ہوئے آستان قدس رضوی کے متولی   نے کہا کہ   آستان قدس  رضوی میں ہر کام علم  و سائنس اور منطق کی بنیاد پر انجام پانا چاہئے
 انہوں نے کہا کہ   سالانہ تین کروڑ زائرین ا یران اور دنیا  بھر کے  ملکوں سے جو  مختلف قومیتوں اور سن  وسال کے ہوتے ہیں حرم کی زیارت کے آتے ہیں  اس لئے آستان قدس رضوی کو دیگرسبھی اداروں کے مقابلے میں سب سے زیادہ  جدید ترین ٹیکنالوجی اور  سائنسی آلات و مہارت سے آراستہ ہونا چاہئے
حجت الاسلام مروی نے کہا  کہ آستان قدس رضوی علم  و سائنس اور نالج بیس کمپنیوں  پر پورا  یقین  و اعتماد رکھتا ہے   و ہ  عملی  طور پر  بھی  جوانوں اور نوجوانوں  کو   میدان میں لانا چاہتا ہے  
  اور یہی وجہ ہے کہ آستان قدس رضوی کے نائب متولی کا انتخاب بھی جوانوں میں سے ہی کیا گیا ہے۔